سینیٹ قائمہ کمیٹی برائے انسانی حقوق نے ڈاکٹر رمیش کمار ونکوانی کے اصرار پر متنازعہ شق کے اخراج پر اتفاق کرلیا

154

اسلام آباد (17فروری2016ء): پاکستان ہندوکونسل کے سرپرست اعلیٰ اور ممبرقومی اسمبلی ڈاکٹر رمیش کمار ونکوانی کے سینیٹ قائمہ کمیٹی برائے انسانی حقوق کے اجلاس میں اصرار پر ہندوشادی ایکٹ میں سے متنازعہ شق کے اخراج پر اتفاق ہوگیا ہے، ڈاکٹر رمیش ونکوانی نے بدھ کے روز پارلیمنٹ ہاؤس میں منعقدہ کمیٹی چیئرپرسن سینیٹر نسرین جلیل کی زیرصدارت اجلاس میں خصوصی طور پر شرکت کی، ڈاکٹر رمیش کمار نے کہا کہ وطن عزیز کے قیام سے ہی امن پسند ہندو برادری کا مطالبہ تھا کہ انکے حقوق کا تحفظ ہندوشادی ایکٹ سے ہی ممکن بنایا جاسکتا ہے، انہوں نے پارلیمان کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ انہیں ہندوشادی ایکٹ کے سلسلے میں کی جانے والی جدوجہد پر فخر ہے اور وہ چاہتے ہیں کہ یہ تاریخی بل پارلیمنٹ سے متفقہ طور پر منظور ہو، تاہم انہوں نے ملک بھر کی ہندو برادری کی نمائندگی کرتے ہوئے کمیٹی ممبران کو حالیہ پیش کردہ ہندو شادی ایکٹ کی متنازعہ شقوں کے حوالے سے پائی جانی والی تشویش سے آگاہ کیا، ڈاکٹر رمیش ونکوانی کا کہنا تھا کہ اٹھارہ سال سے کم عمر کی شادی کسی بھی مذہب اور معاشرے میں قابل قبول نہیں سمجھی جاتی، متنازعہ شق بارہ (تین)کے تحت مذہب تبدیلی کی وجہ سے شادی کا ختم ہوجانا سخت تشویشناک امر ہے، اس شق کی موجودگی میں زبردستی مذہب تبدیلی کے واقعات میں تیزی آنے کا اندیشہ ہے، انہوں نے سینیٹ کمیٹی ممبران سے استدعا کی کہ شق نمبر بارہ (تین)کا قومی اسمبلی میں پیش کردہ ہندو شادی ایکٹ سے اخراج کیا جائے، ڈاکٹر رمیش ونکوانی نے مزید کہا کہ سندھ اسمبلی میں حالیہ پیش کردہ ہندوشادی ایکٹ درحقیقت رجسٹریشن سے متعلق ہے اور یہ رجسٹریشن انتظامات انہوں نے آج سے ایک برس پہلے سپریم کورٹ کے احکامات کی بناء پر نادرا میں کروالی تھیں، ہندوشادی بل کو متفقہ طور پر منظور کروانے کیلئے صوبائی اسمبلیوں سے آرٹیکل 144اور سپریم کورٹ سے احکامات میں اپنا بھرپور کردار ادا کیا،سندھ اور بلوچستان صوبائی حکومتوں نے قرارداد منظور کرکے یہ معاملہ وفاق کو سونپ دیا، اس موقع پر سینیٹر فرحت اللہ بابر، بیرسٹر ظفراللہ سمیت دیگر ممبران نے ڈاکٹر رمیش کمار ونکوانی کے موقف کی تائید کرتے ہوئے کہا کہ ہندو شادی ایکٹ کا بنیادی مقصد ہندوبرادری کو احساسِ تحفظ فراہم کرنا ہے اور اس سلسلے میں ہندو راہنماء ڈاکٹر رمیش کمار ونکوانی کے تحفظات کو دور کیا جاناضروری ہے، بعد ازاں بحث و مباحثے کے بعد سینیٹ قائمہ کمیٹی نے متنازعہ شق کے اخراج پر اتفاق کرلیا۔

Load More Related Articles
Load More By PHC
Load More In اردو - URDU

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Check Also

Disaster reduction by Dr Ramesh Kumar Vankwani

Every year on October 13, the world observes the International Day for Natural Disaster Re…