موجودہ بجٹ عوام دوست اور غریب پرور ہے ڈاکٹر رمیش کمارونکوانی کا قومی اسمبلی میں جاری بجٹ بحث میں حصہ

305

اسلام آباد (15جون2016 ؁ء): تھرپارکر سے مسلم لیگ (ن)کے ممبرقومی اسمبلی ڈاکٹر رمیش کمار ونکوانی نے حالیہ بجٹ برائے 2016-17کو عوام دوست اورغریب پرور قرار دیا ہے، ڈاکٹر رمیش کمار نے قومی اسمبلی میں بجٹ پر جاری بحث میں موجودہ حکومت کی طرف سے جاری منصوبوں کا دفاع کرتے ہوئے کہا کہ پبلک ا نویسٹمنٹ 10فیصد بڑھی ہے۔ سٹاک اییکسچنج پاکستان کی تاریخ میں پہلی مرتبہ 36ہزارپر پہنچی ہے، ریونیو کولیکشن 2013 ؁ء میں 1900 بلین تھا جبکہ ہمارا ٹارگٹ 3600 بلین ہے جس کے لیے ہم کافی پر امید ہیں،پارلیمنٹ ہاؤس کے باہر صحافیوں سے گفتگو میں ڈاکٹر رمیش ونکوانی نے پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کے حالیہ ٹویٹر پیغام کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ جو لوگ یہ کہتے ہیں کہ یہ وفاق کا بجٹ نہیں ہے بلکہ یہ مسلم لیگ (ن) کا بجٹ ہے، یہ پنجابستان کا بجٹ ہے ۔ میں ان کو یہ بتانا چاہتا ہوں کہ حالیہ بجٹ میں سال 2016-17کیلئے پی ایس ڈی پی میں صوبوں کیلئے 875بلین روپے مختص کیے گئے ہیں جو کہ گزشتہ سال کی نسبت 20فیصد زیادہ ہیں، ڈاکٹر رمیش نے مزید کہا کہ موجودہ حکومت کو توانائی کا بحران ورثے میں مِلا تھا لیکن انتھک کوششوں کی بدولت بجلی کی لوڈشیڈنگ پر کافی حد تک قابو پالیا گیا ہے، حال ہی میں وفاقی حکومت نے سندھ کے دوردراز علاقوں میں بجلی کی بلاتعطل فراہمی یقینی بنانے کیلئے ایک ارب چونسٹھ لاکھ روپے کا منصوبہ بھی منظور کیا ہے، میں خود چونکہ تھرپارکر سے ہوں ، میں یہ بتا سکتا ہوں کہ بجلی کی اعلانیہ لوڈ شیڈنگ 6 سے 8 گھنٹے ہو رہی ہے ۔ ڈاکٹر رمیش ونکوانی نے سندھ کے ترقیاتی منصوبے تھرکول، نئی گنج ڈیم دادو، دروت ڈیم جامشورو، گریٹر کراچی واٹر سپلائی اسکیم، ملتان تا سکھرتا حیدرآباد سیکشن موٹروے، گوادر کو کراچی اور نوابشاہ سے منسلک کرنے کے منصوبوں کا حوالہ بھی دیا۔ اس موقع پر ڈاکٹر رمیش کمار ونکوانی نے مزید بتایا کہ وفاقی حکومت نے سندھ کے عوام کو جدید تعلیم سے بہرہ ور کرنے کے لیے نوابشاہ میں شہید بے نظیر بھٹو یونیورسٹی کے قیام کے لیے 200 ملین روپے مختص کرنے کا فیصلہ کیا ہے، فارن پالیسی کے حوالے سے انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت نے امریکہ کے بلوچستان میں حالیہ ڈرون حملے کو بے باک انداز میں پاکستان کی خودمختاری پر حملہ قرار دیا، ملک کو دہشت گردی کے ناسور سے محفوظ رکھنے کیلئے طورخم بارڈر پر خاردار تار لگوائی۔ ڈاکٹر رمیش کمار نے قومی سطح پر کانفرنس بلانے کا مطالبہ کیا تاکہ اقلیتوں کے اور خواتین کے مسائل حل کیے جا سکیں۔

Load More Related Articles
Load More By PHC
Load More In اردو - URDU

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Check Also

A Political Shift by Dr Ramesh Kumar Vankwani

I was elected as a member of the National Assembly from the PML-N’s platform in 2013 under…