انتہاپسندانہ نظریات نے قومی پرچم کو بھی تقسیم کرڈالا ڈاکٹر رمیش کمارونکوانی کا تقریب سے خطاب

56

phc_dec6-2014
اسلام آباد/کراچی (6دسمبر2014ء): پاکستان ہندو کونسل کے سرپرست اعلیٰ اور ممبر قومی اسمبلی ڈاکٹر رمیش کمار ونکوانی نے کہا ہے کہ دنیا بھر کے مذاہب کی تعلیمات ایک دوسرے کا احترام کرنے کو لازم قرار دیتی ہیں، انتہاپسندانہ نظریات نے نہ صرف معاشرے کو یرغمال بنالیا ہے بلکہ پاکستان کے قومی پرچم کی من پسند تشریح کرکے محب وطن اقلیتوں کو قومی دھارے سے الگ کیا جارہا ہے۔ وہ وفاقی دارالحکومت میں غیرسرکاری ادارے پی ڈ ی ایف کے زیراہتمام اقلیتوں کے حوالے سے منعقدہ تقریب سے خطاب کررہے تھے۔

ڈاکٹر رمیش کمار کا کہنا تھا کہ قومی پرچم میں سبز رنگ درحقیقت پاکستان میں بسنے والے تمام پاکستانیوں بشمول اقلیتی برادری کی نمائندگی کرتا ہے جبکہ سفید رنگ کا مقصدامن و سلامتی کو یقینی بنانا ہے۔ انہوں نے افسوس کا اظہار کیا کہ پاکستان سے بے لوث محبت و قربانیوں کے باوجود قومی پرچم کو تقسیم کرکے وطن عزیز میں اقلیتوں کا جینا محال کیا جارہاہے اور انہیں ہجرت پر مجبور کیا جارہاہے۔

ڈاکٹر رمیش نے مزید کہا کہ حکومت کو اقلیتوں کے حقوق کے تحفظ اور دادرسی کیلئے سپریم کورٹ کے19جون کے احکامات پر عملدرآمد کیلئے ٹھوس اقدامات اٹھانے ہونگے، انہوں نے آگاہ کیا کہ اس سلسلے میں سپریم کورٹ میں اگلی سماعت 16دسمبرکو ہوگی۔ انہوں نے علماء کرام اور اسلامی اسکالرز پر زور دیا کہ وہ برداشت اور رواداری پر مبنی ایک پرامن معاشرے کی تشکیل میں اپنا بھرپور کردار ادا کریں ۔

Load More Related Articles
Load More By PHC
Load More In اردو - URDU

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Check Also

Daily Jang Karachi (March 23, 2017)