دہشت گردی کا کوئی مذہب نہیں، ڈاکٹر رمیش کمار نے ٹرمپ کے نام احتجاجی خط لکھ دیا

11

اسلام آباد (24ستمبر2019ء): پاکستان ہندوکونسل کے سرپرست اعلیٰ اور ممبر قومی اسمبلی ڈاکٹر رمیش کمار وانکوانی نے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے اسلامی دہشت گردی سے متعلق حالیہ بیان کو نہایت افسوسناک قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ دہشت گردی کا کوئی مذہب نہیں ہوتا،امریکی صدر ٹرمپ اپنا متنازعہ بیان واپس لیں۔ ڈاکٹر رمیش کمار وانکوانی نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر امریکی صدر ٹرمپ کو براہ راست مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ دہشت گردی کو کسی مذہب سے نتھی کرنا غلط ہے، امریکی صدر کے قابل مذمت بیان سے مذہبی ہم آہنگی کی کاوشوں کو دھچکہ لگاہے۔ اس حوالے سے ڈاکٹر رمیش کمار وانکوانی کا امریکی صدر ٹرمپ کے نام باضابطہ خط بھی سوشل میڈیا پر گردش میں آگیا ہے، اپنے احتجاجی مراسلے میں ڈاکٹر رمیش کمار نے زور دیا ہے کہ ٹرمپ کا حالیہ بیان دنیا میں بسنے والے ہر اس انسان کیلئے تشویش کا باعث بنا ہے جو خدمت انسانیت، مذہبی ہم آہنگی اور احترام مذاہب پر یقین رکھتے ہیں، انہوں نے مزید کہا کہ دنیا کا ہر مذہب معصوم انسانوں کا خون بہانے والوں کو کڑی سزادینے کا تلقین کرتا ہے، یہی وجہ ہے کہ نائن الیون کے المناک حملوں کے بعد تمام اسلامی ممالک نے اصولی بنیادوں پر دہشت گردی کے خلاف جنگ میں امریکہ کی حمایت کی، ڈاکٹر رمیش وانکوانی کا مزید کہنا تھا کہ پاکستان دہشت گردی کے خلاف جنگ میں فرنٹ لائن اسٹیٹ کا درجہ رکھتا ہے اور پاکستانی عوام نے دہشت گردی کے عفریت کو شکست دینے کیلئے بے شمار قربانیاں پیش کی ہیں، ٹرمپ کی جانب سے دہشت گردی کو اسلام سے نتھی کرنا اسلامی جمہوریہ پاکستان میں بسنے والے ہر شہری کیلئے نہایت تکلیف دہ ہے۔ امریکی صدر ٹرمپ کے نام اپنے خط میں ڈاکٹر رمیش کا کہنا تھا کہ بطور سربراہ واحد سپرپاور ٹرمپ پر ذمہ داری عائد ہوتی ہے کہ وہ مسئلہ کشمیر سمیت دیرینہ حل طلب تنازعات کے پرامن خاتمہ میں اپنا موثر اور غیرجانبدارانہ کردار ادا کریں بصورت دیگر اندیشہ ہے کہ چند شدت پسند عناصر انکے حالیہ بیان کو جواز بناتے ہوئے اپنے نفرت آمیز ایجنڈے کو آگے بڑھاسکتے ہیں۔ڈاکٹر رمیش وانکوانی نے میڈیا سے گفتگو میں مزید کہا کہ ٹرمپ کے مسئلہ کشمیر پر بیان کا پوری پاکستانی قوم نے خیرمقدم کیا تھا، حالات کا تقاضا ہے کہ ٹرمپ اپنا حالیہ متنازعہ بیان واپس لیں،او آئی سی سمیت تمام اسلامی ممالک کوبھی ٹرمپ بیان پر احتجاج کرنا چاہیے، یہ ہماری اخلاقی ذمہ داری بنتی ہے کہ ہم غلط اقدامات پر اپنا احتجاج ریکارڈ کروائیں۔

Load More Related Articles
Load More By PHC
Load More In Press Releases
Comments are closed.

Check Also

The legend of Disney – The News International – December 6, 2019